Dr. Sahibzada Sajid-ur-Rehman called on Prime Minister Imran Khan. Minister for Religious Affairs Pir Noor-ul-Haq Qadri was also present in the meeting.

October 15, 2021

The Prime Minister  said, “This year, 12 Rabi-ul-Awal will be celebrated in the country with full religious zeal and zest.”

“On this occasion, full attention should be paid to educate young generation on the golden principles of state of Madinah and Seerat-e-Tayyaba”, added the Prime Minister.

Prime Minister highlighted, “The Holy Prophet (SAW) laid the foundation of the state of Madinah on the principles of justice, welfare of the weaker segments of society and meritocracy. He (SAW) paid special attention to the character building of the people.”

The Prime Minister  stressed that in today’s age of internet and social media, the young generation is being badly affected by evils like sex crimes and drugs. In order to save the youth from these moral evils, it is very important to build their character in the light of the golden principles of Seerat-e-Tayyaba.

The Prime Minister explained, “To achieve this objective, the Government has set up Rehmatu-lil-Aalameen Authority, in which renowned Muslim scholars on Seerat-e-Tayyaba will guide youth in their character building.”

He added, “This authority will conduct research and tell the youth what were the factors that led the Muslims to rule over 150,000 square kilometers of land in a short span of thirteen years (623-636) overpowering the great Roman and Persian empires of the day.”
 
اسلام آباد : 15 اکتوبر 2021

وزیرِ اعظم عمران خان سے ڈاکٹر صاحبزادہ ساجد الرحمان کی ملاقات۔ وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری بھی ملاقات میں شریک۔

رواں سال ملک میں 12ربیع الاول بھرپور مذہبی عقیدت و احترام اور جوش و خروش سے منایا جاۓ گا۔ وزیراعظم

اس موقع پر نوجوان نسل کو ریاست مدینہ اور سیرت طیبہ کے راہنما اصولوں سے روشناس کرانے پر بھرپور توجہ دی جاۓ۔ وزیراعظم

حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے ریاست مدینہ کی بنیاد عدل و انصاف، معاشرے کے کمزور طبقات کی فلاح و بہبود اور میرٹ کی حکمرانی پر رکھی۔ وزیراعظم

آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے لوگوں کی کردار سازی پر خصوصی توجہ دی۔ وزیراعظم

آج انٹرنیٹ اور سوشل میڈیا کے دور میں نوجوان نسل جنسی جرائم اور منشیات جیسی برائیوں سے بری طرح متاثر ہو رہی ہے۔ وزیراعظم



نوجوانوں کو ان اخلاقی برائیوں سے بچانے کے لیے سیرت طیبہ کے سنہری اصولوں  کی روشنی میں ان کی کردار سازی بہت ضروری ہے۔ وزیراعظم

اس مقصد کے حصول کے لیے حکومت نے رحمت اللعالمین اتھارٹی قائم کی ہے، جس میں سیرت طیبہ پر اعلی شہرت کے حامل  سکالرز نوجوانوں کی کردار سازی کے لیے راہنمائی کریں گے۔ وزیراعظم

یہ اتھارٹی تحقیق کر کے نوجوانوں کو بتاۓ گی وہ کون سے عوامل تھے جن کی وجہ سےمحض تیرہ برس کی قلیل مدت میں (623-636) مسلمان قیصر و کسری کی عظیم سلطنتوں کو زیرکر کے 150,000 مربع کلومیٹر زمین پر حکمرانی کرنے لگے۔
وزیر اعظم