Prime Minister Imran Khan chaired a meeting of the National Coordination Committee (NCC) on Housing, Construction & Development to review the progress made on existing and new projects here today.

October 14, 2021

Islamabad the 14th October, 2021

PRESS RELEASE

 

*Cadastral mapping important for eliminating encroachments and enhancing land revenues* : PM *Provinces should expedite legislation for stopping land-use changes and protection of green spaces* :  PM

*250,000 employment opportunities created so far since construction activities started under Naya Pakistan Housing program* : PM

 

Prime Minister Imran Khan chaired a meeting of the National Coordination Committee (NCC) on Housing, Construction & Development to review the progress made on existing and new projects here today.

 

While receiving a briefing from Surveyor General of Pakistan Maj. Gen. Shahid Pervez, the Prime Minister remarked that Cadastral Mapping would help in development of an authentic land record database. It would help in clearly identifying demarcation of land and thereby eliminate illegal encroachments, added the PM. Moreover, the authentic database would also contribute towards enhancing revenues received from lands, stated the PM.

The Prime Minister further said that “land-use changes need to be checked where green vegetation areas are being converted to urban projects”. He advised all the provincial and AJ&K Governments to expedite legislation to put a stop to land-use changes. The Prime Minister stated that protection of green spaces and agricultural lands is essential for environmental considerations and to safeguard food security.  However, construction projects would be allowed under regulations.

The NCC meeting was briefed that, under Phase-I of the mapping exercise, 90 % digitization of State Lands has been completed in Punjab, 96% in Khyber Pakhtunkhwa and 50% in Balochistan. Chairman CDA informed that with the help of Cadastral Maps, CDA has started imposition of fines on encroachers and the amount collected is being used for compensation of general masses who were defrauded by illegal housing societies.

The NCC meeting was attended by Federal Minister Fawad Ahmed, Minister of State Farrukh Habib, SAPM Dr. Shehbaz Gill, SAPM Malik Amin Aslam, Minister Local Govt. Punjab Mian Mehmood ur Rasheed, MNA Aftab Siddiqui, Chairman Naya Pakistan Housing & Development Authority Lt. Gen. (R) Anwar Ali Haider, Chairman FBR, Surveyor General of Pakistan, and senior officers. Chief Secretaries of Punjab, Balochistan, Sindh and AJ&K; and ACS Khyber Pakhtunkhwa joined the meeting via video link.

Earlier the Prime Minister also chaired a meeting to review progress on Ravi Urban Development Project and Central Business District Lahore. The Prime Minister directed the concerned authorities to expedite progress as these projects are very important for attracting Foreign Direct Investment in the Country.Deputy Governor State Bank of Pakistan and Chief Secretary Gilgit Baltistan also joined the NCC meeting via video link.

سرسبز اور زرعی اراضی کے استعمال میں تبدیلی کو روکنے کے لئے قانون سازی میں تیزی لائی جائے، کیڈسٹرل میپنگ مستند لینڈ ریکارڈ ڈیٹا بیس کی ترقی میں معاون ثابت ہو گی، نیاپاکستان ہائوسنگ پروگرام کے تحت روزگار کے اڑھائی لاکھ مواقع پیدا ہوئے ہیں،وزیراعظم

 

اسلام آباد۔14اکتوبر (اے پی پی):وزیراعظم عمران خان نے صوبوں اور آزاد کشمیر کی حکومت کو ہدایت کی ہے کہ وہ سرسبز اور زرعی اراضی کے استعمال میں تبدیلی کو روکنے کے لئے قانون سازی میں تیزی لائیں، کیڈسٹرل میپنگ تجاوزات کے خاتمہ اور لینڈ ریونیو میں اضافہ کے لئے اہمیت کی حامل ہے، نیاپاکستان ہائوسنگ پروگرام کے تحت تعمیراتی سرگرمیاں شروع ہونے کے بعد سے اب تک روزگار کے اڑھائی لاکھ مواقع پیدا ہوئے ہیں۔

 

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت جمعرات کوہائوسنگ، تعمیرات اور ترقی پر قومی رابطہ کمیٹی کااجلاس منعقد ہوا جس میں موجودہ اور نئے منصوبوں پر پیشرفت کا جائزہ لیا گیا۔

 

اجلاس کو سرویئر جنرل آف پاکستان میجر جنرل شاہد پرویز نے بریفنگ دی جس پر وزیراعظم نے اپنے ریمارکس میں کہا کہ کیڈسٹرل میپنگ ایک مستند لینڈ ریکارڈ ڈیٹا بیس کی ترقی میں معاون ثابت ہو گی۔ اس سے زمین کی حد بندی کو واضح طورپر پہنچاننے اور غیرقانونی تجاوزات کے سد باب میں مدد ملے گی جبکہ یہ مستند ڈیٹا بیس سے زمینوں سے حاصل ہونےوالی آمدنی کو بڑھانے میں بھی کردار ادا کرے گا۔

 

وزیراعظم نے کہا کہ سر سبز علاقوں کو شہری منصوبوں میں جہاں تبدیل کیا جا رہا ہے وہاں زمین کے استعمال کے حوالے سے ان تبدیلیوں کو دیکھنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے تمام صوبائی اور آزاد کشمیر کی حکومتوں کو ہدایت کی کہ وہ اراضی کے استعمال میں تبدیلی کو روکنے کے لئے قانون سازی میں تیزی لائیں ۔ وزیراعظم نے کہا کہ ماحولیاتی اور غذائی تحفظ کے لئے سرسبز علاقوں اور زرعی زمینوں کا تحفظ ضروری ہے تاہم قواعد و ضوابط کے تحت تعمیراتی منصوبوں کی اجازت ہو گی۔

 

نیشنل کوآرڈینیشن کمیٹی کو بتایا گیا کہ نقشہ سازی کے پہلے مرحلہ کے تحت پنجاب میں 90 فیصد ، خیبر پختونخوا میں 96 فیصد اور بلوچستان میں 50 فیصد ڈیجیٹلائزیشن مکمل ہوچکی ہے۔ چیئرمین سی ڈی اے نے اجلاس کو بتایا کہ کیڈسٹرل میپنگ کی مدد سے سی ڈی اے نے تجاوزات کرنے والوں پر جرمانے عائد کرنا شروع کر دیئے ہیں اور اس سےحاصل ہونے والی رقم غیر قانونی ہائوسنگ سوسائٹیوں کی دھوکہ دہی کا نشانہ بننے والے افراد کو معاوضہ کے طور پر ادائیگی میں استعمال ہو رہی ہے۔

 

اجلاس میں وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات چوہدری فواد حسین ، وزیرمملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب ، وزیراعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل ، ملک امین اسلم نے شرکت کی۔ پنجاب سے میاں محمود الرشید، رکن قومی اسمبلی آفتاب صدیقی ، چیئرمین نیا پاکستان ہائوسنگ اتھارٹی لیفٹیننٹ جنرل (ر) انور علی حیدر ، چیئرمین ایف بی آر، سرویئر جنرل آف پاکستان نے شرکت کی ۔

 

گورنر سٹیٹ بینک رضا باقر ، پنجاب ، بلوچستان ، سندھ ، گلگت بلتستان اور آزاد جموں کشمیر کے چیف سیکرٹریز اور خیبر پختونخوا کے ایڈیشنل چیف سیکرٹری ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک ہوئے ۔

 

قبل ازیں وزیراعظم نے راوی اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ اور سنٹرل بزنس ڈسٹرکٹ لاہورپر پیشرفت کے جائزہ اجلاس کی بھی صدارت کی ۔وزیراعظم نے متعلقہ حکام کو ان منصوبوں میں تیزی لانے کی ہدایت کی کیونکہ یہ منصوبے ملک میں براہ راست غیر ملکی سرمایہ کاری کو راغب کرنے کے لئے انتہائی اہم ہیں۔