Special Assistant to Prime Minister on Poverty Alleviation and Social Protection Dr. Sania Nishtar called on Prime Minister Imran Khan at Islamabad.

October 01, 2021

A detailed briefing about progress on Model Panahgahs was given to the Prime Minister by Dr. Sania Nishtar.

The Model Panahgah concept focuses on sustainability and service delivery under the same roof whereby the execution of the plan has already been started. The plan includes 4 purpose built Model Panahgahs with adjacent Ehsaas One Window centers, Cash for Work Program and Section of Commercial area to make the facility financially independent and sustainable. Ehsaas one Window centers will ensure easy access to Ehsaas program and Cash for Work program will help the daily wagers to get work as well.

 

Land for purpose built Panahgahs have been identified and the facilities will be constructed in one year. A central advisory board has already been constituted and a 4 member operational monitoring board for each Panahgah will be constituted soon. Moreover the deployment of the Digital Monitoring system will also be completed in the coming week. In addition to the above the infrastructure repairs of the existing facilities will also commence in a couple of weeks and donation management system is expected to be completed and deployed till the year end.

 

Prime Minister Imran Khan emphasizing the significance of the Panahgah initiative, said that the government is striving to present  Model Panahgahs as an example whereby not only the residents are given food and shelter, but also they have easy access to social protection and poverty alleviation initiatives of the government. Model Panahgahs will have trained staff at par with international standards of hospitality. Once the Model Panahgahs are complete overseas Pakistanis and domestic donors will cooperate with the government in their operations, he added.

 

پناہ گاہوں میں مقیم لوگوں کی سہولیات کا خاص خیال رکھا جائے. وزیرِ اعظم کی ہدایت.

 

حکومت ماڈل پناہ گاہوں کی تعمیر سے مثال قائم کر رہی ہے. وزیرِ اعظم

 

ماڈل پناہ گاہوں کی تعمیر سے مخیر حضرات اور بیرونِ ملک مقیم پاکستانی اس کام میں حکومت کے شانہ بشانہ ہونگے. وزیرِ اعظم

 

حکومت پناہ گاہوں کے سٹاف کو بین الاقوامی معیار کی تربیت فراہم کر رہی ہے. وزیرِ اعظم.

 

پناہ گاہوں کے ساتھ احساس ون ونڈو سینٹر سے مستحق افراد کو سہولیات تک آسان رسائی ممکن ہو سکے گی. وزیرِ اعظم

 

 

وزیرِ اعظم عمران خان سے معاونِ خصوصی برائے تخفیفِ غربت و سماجی تحفظ  ڈاکٹر ثانیہ نشتر کی ملاقات

 

ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے وزیرِ اعظم کو نئی ماڈل پناہ گاہوں پر پیش رفت پر تفصیلی بریفنگ دی.

 

 

پناہ گاہوں کیلئے مرکزی ایڈوائزی بورڈ کی تشکیل مکمل کر لی گئی ہے. بریفنگ

 

 

ہر پناہ گاہ کیلئے 4 رکنی انتظامی بورڈ بھی جلد تشکیل دے دیا جائے گا. بریفنگ.

 

آئندہ ایک ہفتے میں ہر پناہ گاہ کیلئے ڈیجیٹل مانیٹرنگ سسٹم کا اجراء بھی کر دیا جائے گا. بریفنگ

 

4 پناہ گاہوں کیلئے مخصوص عمارتوں کی تعمیر کے سلسلے میں زمین کی نشاندہی کر لی گئی ہے. بریفنگ.

 

پناہ گاہوں کی تعمیر کا کام ایک سال کی مدت میں مکمل کر لیا جائے گا. بریفنگ

 

 

احساس ون ونڈو سینٹر، مزدوروں کیلئے "کیش فار ورک" پروگرام اور پناہ گاہوں کو معاشی طور پر مستحکم کرنے کیلئے کمرشل حصے کی تعمیر ماڈل پناہ گاہوں میں شامل ہوگی. بریفنگ.

 

 

موجودہ پناہ گاہوں میں تعمیراتی ڈھانچے کی مرمت کا کام بھی منصوبے کا حصہ ہے. بریفنگ.

 

پناہ گاہوں کیلئے مرکزی ڈیجیٹل ڈونیشن مینیجمنٹ سسٹم بھی راوں سال کے آخر تک مکمل کر لیا جائے گا. بریفنگ

 

ملاقات میں ایم ڈی بیت المال ملک ظہیر عباس کھوکھر بھی شریک.

 

وزیرِ اعظم نے ماڈل پناہ گاہوں پر پیش رفت کو تسلی بخش قرار دیتے ہوئے معینہ مدت میں انکی تکمیل کو یقینی بنانے کی ہدایت جاری کی.