Pakistan is blessed in terms of tourism potential in the entire region and government will ensure its full utilization: PM

July 26, 2021

 Prime Minister Imran Khan chaired a review meeting on the progress made so far on the steps taken for the promotion of tourism in Pakistan.

 SAPM Dr. Shahbaz Gill, Chief Minister Khyber Pakhtunkhwa Mehmood Khan, Asif Mehmood Khan Advisor to Chief Minister Punjab for Tourism, Chief Secretaries of all four provinces and concerned officers participated through video link.

 

 The meeting was briefed on the progress made so far on various points of the roadmap for the promotion of tourism.

 The meeting was informed that  geo-mapping of tourist destinations in all the provinces has almost been completed, which will help to develop and attract investment in tourist destinations.

 In addition, a calendar of cultural festivals is being prepared.

 All details will soon be uploaded on tourist websites and tourism e-portal.

 Regarding the development of tourist destinations in accordance with international standards, it was informed that feasibility of various projects has been prepared in Khyber Pakhtunkhwa, Punjab and Azad Kashmir.

 The meeting was also apprised of the commencement and progress of development work in Nandana Fort.

 

 The meeting was also briefed in detail about the steps taken by the Ministry of Foreign Affairs to promote tourism in the country

 It was informed that due to the efforts of Pakistani embassies, over a dozen countries have made positive changes in their travel advisory regarding Pakistan, while provision of promotional materials by PTDC to promote tourism in Pakistan to 24 embassies has been ensured.  It was further informed that special desks have been set up in 27 embassies for the promotion of tourism and assistance has been provided to about 133 foreign tourism companies for operation in Pakistan.  In addition, the issuance of e-visa has been reduced to 7-10 days only to facilitate foreign tourists.  More than 71,000 foreign tourists have so far availed the e-visa facility.

 

 The meeting was also apprised of the steps taken for the promotion of coastal tourism in Balochistan.

 The meeting was informed that approval has been given to build  tourist resorts at Kand Malir and Marine Drive Gwadar.  Also construction of fish landing sites, floating jetties, small fishing boats, rest areas on coastal highways and coastal parks are included in the project. 

 

 The meeting was informed that special desks have been set up at airports in Chitral, Saidu Sharif, Islamabad and Skardu for the convenience of tourists.  PIA's Air Safari is also operational and a large number of tourists are benefitting from it.

 Stressing on the importance of tourism, Prime Minister directed that the calendar of cultural festivals should be prepared keeping in view the importance of festivals so that tourists could participate in important festivals without any hassle.

 Instructing to identify the areas for tourism in Balochistan and present a plan for their development soon, the Prime Minister said that the coastline of Balochistan is very beautiful and full of natural beauty.  There are countless investment opportunities that will be utilized.

 Referring to government rest houses, the Prime Minister said that not only public access to these public-funded buildings should be ensured, but also plans for their better utilization to facilitate tourists should be implemented soon. The Prime Minister further said that steps should be taken within the stipulated time to make Pakistan a tourist destination in the region which would bring investment and foreign exchange to Pakistan.

 

پاکستان سیاحت کے اعتبار سے خطے میں سب سے زیادہ وسائل کا حامل ہے اور موجودہ حکومت ان سے مکمل استفادہ حاصل  کرنے کو یقینی بنائے گی: وزیرِ اعظم

 

وزیرِ اعظم عمران خان کی زیرِ صدارت سیاحت کے فروغ کیلئے اٹھائے گئے اقدامات پر اب تک کی  پیش رفت کے حوالے سے جائزہ اجلاس. 

معاونِ خصوصی شہباز گل، وزیرِ اعلی خیبر پختونخوا محمود خان، آصف محمود خان مشیر وزیرِ اعلی پنجاب برائے سیاحت، چاروں صوبوں کے چیف سیکریٹریز اور متعلقہ افسران کی وڈیو لنک کے ذریعے شرکت. 

 

سیاحت کو فروغ دینے کیلئے طے شدہ روڈ میپ کے مختلف نکات پر اب تک کی  پیش رفت کے حوالے سے تفصیلی بریفنگ

اجلاس کو بتایا گیا کہ تمام صوبوں میں سیاحتی مقامات کی جیو میپنگ کا کام تقریباً مکمل کیا جا چکا ہے 

اس اقدام سے  سیاحتی مقامات پر ترقیاتی کاموں اور سرمایہ کاری میں مدد ملے گی. 

علاوہ ازیں تقافتی تہواروں کا کیلنڈر بھی تشکیل دیا جا رہا ہے۔ 

تمام تفصیلات جلد سیاحتی ویب سائٹس اور ٹورازم ای پورٹل پر  اپ لوڈ کر دی جائیں گی۔

سیاحتی مقامات کے  بین الاقوامی معیار کے مطابق فروغ کے حوالے سے بتایا گیا کہ خیبر پختونخوا، پنجاب اور آزاد کشمیر میں مختلف منصوبوں کی فیزیبلٹی تیار کی جا چکی ہے۔ 

اجلاس کو نندنا قلعہ میں ترقیاتی کام کے آغاز اور پیش رفت  سے بھی آگاہ کیا گیا. 

ملک میں سیاحت کے فروغ کیلئے وزارتِ خارجہ کی جانب سے  اٹھائے گئے اقدامات کے حوالے سے بھی تفصیلی بریفنگ

اجلاس کو بتایا گیا کہ پاکستانی سفارتخانوں کی کوششوں سے درجن بھر ممالک نے پاکستان کے حوالے سے اپنی ٹریول ایڈوائزری میں مثبت تبدیلی کی ہے جبکہ 24 سفارتخانوں میں پاکستان میں سیاحت کے فروغ کیلئے پی ٹی ڈی سی کی طرف سے تشہیری مواد کی فراہمی یقینی بنائی جا چکی ہے. مزید بتایا گیا کہ 27 سفارتخانوں میں سیاحت کے فروغ کیلئے خصوصی ڈیسک مختص کئے جا چکے ہیں اور 133 کے قریب غیر ملکی سیاحتی کمپنیوں کو پاکستان میں سیاحت کے فروغ کیلئے معاونت فراہم کی جا چکی ہے. اسکے علاوہ غیر ملکی سیاحوں کی سہولت کیلئے ای ویزہ کے اجراء کے وقت کو کم کرکے صرف 7-10 دن کر دیا گیا ہے. مزید اب تک 71 ہزار سے زیادہ غیر ملکی سیاح ای ویزہ کی سہولت سے استفادہ حاصل کر چکے ہیں.  

 

اجلاس کو بلوچستان میں ساحلی پٹی پر سیاحت کے فروغ کیلئے اٹھائے گئے اقدامات سے بھی آگاہ کیا گیا. 

اجلاس کو بتایا گیا کہ کنڈ ملیر اور میرین ڈرائیو گوادر پر ریزارٹ بنانے کی منظوری دے دی گئی ہے. اسکے علاوہ فش لینڈنگ سائٹس، فلوٹنگ جیٹیز، چھوٹی مچھیروں کی کشتیاں، کوسٹل ہائی وے پر ریسٹ ایریاز اور ساحلی پارکس کی تعمیر بھی منصوبے کا حصہ ہے. 

 

اجلاس کو بتایا گیا کہ چترال، سیدو شریف اسلام آباد اور سکردو میں ہوائی اڈوں پر سیاحوں کی سہولت کیلئے خصوصی ڈیسک قائم کیے گئے ہیں. پی آئی اے کی ایئر سفاری بھی فعال ہے اور سیاحوں کی بڑی تعداد اس سے فائدہ اٹھا رہی ہے.

وزیرِ اعظم نے سیاحت کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے ہدایت کی  کہ تقافتی تہواروں کا کیلنڈر تہواروں کی اہمیت کو مد نظر رکھتے ہوئے بنایا جائے تاکہ سیاح کسی قسم کی بھی مشکلات میں مبتلا ہوئے بغیر اہم تہواروں میں شریک ہو سکیں. 

بلوچستان میں سیاحت کے حوالے سے موجود علاقوں کی نشاندہی اور ان کی ترقی کی منصوبہ بندی جلد پیش کرنے کی ہدایت جاری کرتے ہوئے وزیرِ اعظم نے کہا کہ بلوچستان کی ساحلی پٹی انتہائی خوبصورت اور قدرتی حسن سے مالامال ہے. وہاں سرمایہ کاری کے بے پناہ مواقع ہیں جن سے استفادہ حاصل کیا جائے گا. 

سرکاری ریسٹ ہاؤسز کے حوالے سے وزیرِ اعظم نے کہا کہ عوامی پیسے سے قائم ہونے والی ان عمارات تک نہ صرف عام عوام کی رسائی یقینی بنائی جائے بلکہ انکو بہتر طریقے سے سیاحوں کو سہولت دینے کیلئے بروئے کار لانے کی منصوبہ بندی پر جلد عملدرآمد یقینی بنایا جائے۔  مزید وزیرِ اعظم نے کہا کہ پاکستان کو خطے میں سیاحت کا مرکز بنانے کیلئے اقدامات پر طے شدہ مدت میں عملدرآمد یقینی بنایا جائے جس سے پاکستان میں سرمایہ کاری اور زرمبادلہ آئے گا.