وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت بنیادی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں خصوصاً گندم اور چینی کی دستیابی اور قیمتوں کے حوالے سے اعلیٰ سطح کا اجلاس۔

October 13, 2020

اسلام آباد، 13اکتوبر2020:

٭ وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت  بنیادی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں خصوصاً گندم اور چینی کی دستیابی اور قیمتوں کے حوالے سے اعلیٰ سطح کا اجلاس۔ اجلاس میں وفاقی وزراء مخدوم شاہ محمود قریشی، سینیٹر شبلی فراز، مخدوم خسرو بختیار، محمد حماد اظہر، سید فخر امام،  علی امین گنڈا پور،مشیران ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ، عبدالرزاق داؤد، ڈاکٹر عشرت حسین، معاونین خصوصی ڈاکٹر شہباز گل، محمد عثمان ڈار، وقار مسعود، گورنر سٹیٹ بنک ڈاکٹر رضا باقر، سینئر حکومتی اہلکار شریک،  وزیر خوراک  پنجاب عبدالعلیم خان، وزیر صنعت پنجاب میاں اسلم اقبال اور صوبائی چیف سیکرٹری صاحبا ن کی ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت

٭ اجلاس کے پہلے حصے میں  ملک میں گندم کی دستیابی، مختلف صوبوں میں گندم اور آٹے کی قیمتوں اور مستقبل کی ضروریات کو پورا کرنے کے حوالے سے سرکاری سطح اور نجی شعبے کی جانب سے درآمد کی جانے والی گندم اور ملک میں پہنچ کا شیڈول پیش کیا گیا۔ سرکاری سطح پر ٹینڈر اور گورنمنٹ ٹو گورنمنٹ درآمد کا تفصیلی شیڈول بھی پیش۔

٭ اجلاس کو ٹائیگرز فورس اور آزاد ذرائع سے ملک کے مختلف حصوں میں گندم اور آٹے کی قیمتوں کے حوالے سے رپورٹ پیش

٭  گندم کی قیمتوں کو مناسب سطح پر یقینی بنانے اور ذخیرہ اندوزی کی روک تھام کے حوالے سے اٹھائے جانے والے انتظامی اقدامات پر تفصیلی بریفنگ، ان اقدامات میں بنیادی اشیائے ضروریہ کی طلب و رسد کے بارے میں قابل اعتبار تخمینے لگانے کے حوالے سے مفصل نظام، ہول سیلرز اور پرچون کی سطح پر قیمتوں میں پائے جانے والے فرق کو کم کرنے کے حوالے سے اقدامات، مارکیٹ میں استحصال کے خاتمے اور ذخیرہ اندوزی، سمگلنگ اور قیاس آرائیوں کے ختم کرنے کے ساتھ ساتھ مانیٹرنگ کے نظام کو مزید موثر بنانے کے حوالے سے نئے انتظامی اقدامات پر بریفنگ 

٭ اجلاس کو حکومت پنجاب کی جانب سے روزانہ کی بنیادوں پر گندم کی ریلیز کی صورتحال کے بارے میں آگاہ کیا گیا۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ حکومت سندھ کی جانب سے سولہ اکتوبر کے درمیان ریلیز شروع کر دی جائے گی۔ 

٭ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ حکومت پنجاب کی جانب سے روزانہ کی بنیاد پر ریلیز کی جانے والی گندم میں مزید اضافہ کیا جائے گا تاکہ گندم کی وافر سپلائی میسر آئے

٭ اجلاس کے دوسرے حصے میں چینی کی دستیابی اور درآمد کی جانے والی چینی اور اسکی قیمتوں کے حوالے سے بریفنگ

٭ اجلاس کو بتایا گیا کہ درآمد شدہ چینی موجودہ قیمت کے مقابلے میں کم نرخوں پر عوام کو میسر آئے گی۔ 

٭  اجلاس کو بتایا گیا کہ پنجاب میں 10نومبر سے کرشنگ سیزن کا آغاز کر دیا جائے گا۔  موجود سٹاک، درآمد کی جانے والی چینی اور کرشنگ سیزن کے جلدی شروع ہونے سے نہ صرف چینی کی وافر فراہمی میسر آئے گی بلکہ اس کے قیمتوں میں کمی آئے گی۔ 

٭ وزیرِ اعظم عمران خان نے اجلا س سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بنیادی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں کمی لانے کے لئے ہر ممکنہ انتظامی اقدام اٹھایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ذخیرہ اندوزی اور ناجائز منافع خوری کے خلاف سخت ایکشن یقینی بنایا جائے۔ وزیرِ اعظم نے قیمتوں کو قابو میں رکھنے کے لئے تجویز کردہ انتظامی اقدامات کی منظوری دی