وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت گندم  اور چینی کے موجود سٹاک، طلب و رسد،  مستقبل کی ضرورتوں کو پورا کرنے کے حوالے سے کی جانے والی درآمد اور بنیادی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کے حوالے سے جائزہ اجلاس

October 06, 2020

اسلام آباد،06اکتوبر 2020:

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت گندم  اور چینی کے موجود سٹاک، طلب و رسد،  مستقبل کی ضرورتوں کو پورا کرنے کے حوالے سے کی جانے والی درآمد اور بنیادی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کے حوالے سے جائزہ اجلاس

 

اجلاس میں  وفاقی وزراء محمد حماد اظہر، سید فخر امام، مشیران عبدالرزاق داؤد، ڈاکٹر عشرت حسین، معاونین خصوصی لیفٹنٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ، ڈاکٹر شہباز گل، متعلقہ وزراتوں کے سیکرٹری صاحبان اور دیگر سینئر افسران شریک۔ صوبائی چیف سیکرٹری صاحبان ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک 

 

وزیرِ اعظم کو  گندم اور چینی  کے موجود سٹاک اور درآمد کے حوالے سے پیش رفت پر تفصیلی بریفنگ۔ 

 

وزیرِ اعظم کو بنیادی اشیائے ضروریہ کی قیمتوں کے بارے میں بھی تفصیلی بریفنگ

 

وزیرِ اعظم عمران خان نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت گندم اور چینی کی وافر دستیابی کو یقینی بنائے گی۔ وزیرِ اعظم نے ہدایت کی کہ گندم اور چینی کی ذخیرہ اندوزی میں ملوث افراد کے خلاف بھرپور کریک ڈاؤن کیا جائے۔ 

 

وزیرِ اعظم نے صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی کہ گندم کی ریلیز کو مزید بڑھایا جائے تاکہ مارکیٹ میں وافر مقدار میں گندم کی دستیابی کو یقینی بنایا جا سکے۔ 

 

وزیرِ اعظم نے ہدایت کی کہ درآمدکی جانے والی گندم کے ملک میں پہنچنے کا تفصیلی شیڈول پیش کیا جائے۔ 

 

چینی کے حوالے سے وزیرِ اعظم نے چیف سیکرٹری صاحبان کو ہدایت کی کہ چینی ملوں میں موجود سٹاک کی فزیکل ویری فیکیشن کرائی جائے ۔ 

 

وزیرِ اعظم نے چیف سیکرٹری پنجاب  کو ہدایت کی کہ گنے کی کرشنگ کی تاریخ کا جلد از جلد اعلان کیا جائے۔ 

 

وزیرِ اعظم نے چیف سیکرٹری پنجاب اور چیف سیکرٹری سندھ کو ہدایت کی کہ گنے کی سرکاری قیمت کا اعلان بھی جلد از جلد کیا جائے