وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت  فیڈرل بورڈ آف ریونیو میں جاری اصلاحات کے حوالے سے جائزہ اجلاس

August 20, 2020

وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت  فیڈرل بورڈ آف ریونیو میں جاری اصلاحات کے حوالے سے جائزہ اجلاس

 

اجلاس میں  وزیر برائے صنعت محمد حماد اظہر، وزیرِ اطلاعات سینیٹر شبلی فراز، وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر، مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ، مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد،  مشیر برائے ادارہ جاتی اصلاحات ڈاکٹر عشرت حسین، معاون خصوصی لیفٹنٹ جنرل (ر) عاصم سلیم باجوہ،  و دیگر سینیئر افسران شریک

 

چئیرمین ایف بی آر نے وزیرِ اعظم کو ایف بی آر میں جاری اصلاحات  اور اب تک ہونے والی پیش رفت سے آگاہ کیا۔ ان اصلاحات کا مقصد ادارے میں شفافیت  کویقینی بنانا،  ٹیکس کے نظام کو آسان بنانا، آٹومیشن  متعارف کرانا، ٹیکس بیس میں اضافہ  کرنااور کاروباری برادری کے لئے ہر ممکن سہولت کو یقینی بنانا ہے۔ 

 

وزیرِ اعظم نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ  ملک میں ٹیکس کلچر کا فروغ، ٹیکس دہندگان کے لئے آسانیاں پیدا کرنا، کاروباری برادری کے تحفظات کو دور کرنا  اور ایف بی آر  کو بدعنوان عناصر سے پاک کرنا موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ 

 

انہوں نے کہا کہ ٹیکس کے تعین، وصولی اور ریفنڈز کے نظام میں آٹو میشن پر خصوصی توجہ دی جائے ۔ 

 

اس ضمن میں وزیرِ اعظم نے ہدایت کی کہ افراد  ، کمپنیوں اور خصوصاً چھوٹے اور درمیانے درجے کی کمپنیوں کے لئے ٹیکس  فارم کو  ترجیحی بنیادوں پر آسان بنایا جائے ۔ 

 

ایف بی آر کے مختلف شعبوں میں جاری اصلاحات کے حوالے سے وزیرِ اعظم نے ہدایت کی کہ اہداف کے تعین کے ساتھ ساتھ ان کے حصول کے لئے ٹائم لائنز مقرر کی جائیں اور ان پر پیش رفت کی رپورٹ باقاعدگی سے پیش کی جائے۔ 

 

سرحدوں کے ذریعے اسمگلنگ کی روک تھام کے حوالے سے  موثر اقدامات کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے وزیرِ اعظم نے چئیرمین ایف بی آر کو ہدایت کی  کہ سرحدوں پر واقع تمام کراسنگ  پوائنٹس کی موثر نگرانی کے لئے انتظامات یقینی بنائے جائیں ۔