وزیر اعظم عمران خان سے آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کے وفد کی اسلام آباد میں ملاقات

January 01, 2020

اسلام آباد، 01جنوری2020

 

وزیر اعظم عمران خان سے آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کے وفد کی اسلام آباد میں ملاقات ۔

وفد میں گوہر اعجاز ، رحمان نسیم ، عامر فیاض شیخ ، فواد مختار،  خواجہ محمد انیس،  دانش قیصر،  کامران ارشد،  عبدالرحیم ناصر،  یوسف عبدالله، شاہد ستار،  حامد زمان خان اور طارق سعود شامل۔ 

مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد،  مشیر خزانہ ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ،  چیئرمین سرمایہ کاری بورڈ سید زبیر گیلانی،  چیرمین ایف بی آر سید شبر زیدی اور سیکریٹری تجارت ڈویژن  بھی ملاقات میں موجود۔ 

 

اپٹما وفد نے وزیر اعظم اور حکومت کی معاشی ٹیم کا ٹیکسٹائل برآمدات میں اضافہ کے حوالہ سے اٹھائےگئے اقدامات پر شکریہ ادا کیا۔  

 

وفد نے آگاہ کیا کہ گذشتہ سال کپاس کی فصل کو ٹڈی دل کے حملے سے کافی نقصان ہوا جس کی وجہ سے پیداوار کم ہوئی  اس سے ٹیکسٹائل برآمدات میں کمی کا خدشہ ہے۔

 

وفد نے کپاس کی پیداوار بڑھانے کے لیے مختلف تجاویز پیش کیں۔

 

وزیر اعظم نے وفد کی تجویز پر تجارت ڈویژن کو ہدایت جاری کی کہ کپاس کی پیداوار کے معاملات کو دیکھنے  کے لیے ماہر فوکل پرسن تعینات کیا جائے۔ 

 

وزیر اعظم نے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ کپاس پاکستان کی اہم ترین فصل ہے جس کی پیداوار سے روزگار اور معاشی ترقی کے مواقع پیدا ہوتے ہیں۔   ملکی برآمدات کا 60 فی صد حصہ کپاس کی فصل سے ملحقہ ہے۔  حکومت اس ضمن میں چین کے اشتراک سے کپاس سمیت دیگر فصلوں کی پیداوار میں اضافہ کے لیے ریسرچ پر توجہ دے رہی ہے۔ 

 

اپٹما وفد کی تجاویز کے حوالے سے وزیر اعظم نے ہدایات جاری کیں کہ سیڈ ایکٹ میں ترامیم،  کاٹن سیس کو کپاس کی ریسرچ کے لیے مختص کرنے کے حوالے سے تجاویز پر غور کیا جائے، مختلف اقسام کے بیج کی رجسٹریشن اور ٹیکس ریفنڈ کے عمل کو آسان بنایا جائے۔ 

 

وزیر اعظم نے اس بات پر زور دیا کہ زرعی ادویات اور بیج کی اقسام میں ملاوٹ کرنے والے مافیا کے خلاف سخت اقدامات لیے جائیں گے۔