وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت ملک میں صنعت و حرفت کے فروغ خصوصا درآمدات پر ٹیرف کی شرح، موجودہ ٹیرف کے صنعت اور برآمدات پر اثرات اور ٹیرف کے نظام  میں مزید بہتری لانے کے  حوالے سے اقدامات کے سلسلے میں اجلاس

October 31, 2019

اسلام آباد، 31اکتوبر2019:
٭  وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت ملک میں صنعت و حرفت کے فروغ خصوصا درآمدات پر ٹیرف کی شرح، موجودہ ٹیرف کے صنعت اور برآمدات پر اثرات اور ٹیرف کے نظام  میں مزید بہتری لانے کے  حوالے سے اقدامات کے سلسلے میں اجلاس
٭ اجلاس میں مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ، متعلقہ وزارتوں کے سیکرٹری صاحبان اور سینئر افسران موجود
٭  اجلاس میں ٹیرف کے موجودہ نظام اور اس میں بہتری لانے کے لئے اقدامات کا تفصیلی جائزہ
٭ ٹیرف کے نظام  کو کاروباری طبقے کی ضروریات کے مطابق بنانے کے مفصل لائحہ عمل وزیرِ اعظم کو پیش
٭ وزیرِ اعظم نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں صنعت کا فروغ اور منافع بخش کاروباری سرگرمیوں (wealth creation) کے مواقع پیدا کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کاروباری برادری کو ہر ممکن سہولت فراہم کرنے کے لئے پر عزم ہے۔وزیرِ اعظم نے ٹیرف نظام  کے حوالے سے تجاویز کا  خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ان اقدامات کا مقصد جہاں کاروباری طبقے کی مشکلات دور کرنا اور ان کو آسانیاں فراہم کرنا ہے وہاں کاروباری طبقے کو ساز گار ماحول کی فراہمی ہے تاکہ پاکستان پراڈکٹس خطے میں دوسرے ممالک کا مقابلہ کر سکیں اور بین الاقوامی مارکیٹ میں اپنا حصہ حاصل کریں۔