وزیر اعظم عمران خان سے پی ٹی آئی ممبران سندھ اسمبلی کی ملاقات

October 21, 2019


ملاقات میں گورنر سندھ عمران اسمعیل ، وفاقی وزیر پارلیمانی امور اعظم خان سواتی، وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار، وزیر بحری امور سید علی زیدی،  وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا،  معاون خصوصی ندیم بابر اور ممبر قومی اسمبلی اسد عمر بھی موجود۔

ممبران نے اپنے حلقوں میں ہونے والے ترقیاتی کاموں اور مسائل سے آگاہ کیا۔

وزیر اعظم کی ممبران سے گفتگو :--

کراچی ملک کا معاشی حب ہے۔

وفاقی حکومت کو کراچی میں پانی ، ٹرانسپورٹ، ویسٹ منیجمنٹ  اور عوام کو درپیش دیگر مسائل کا مکمل ادارک ہے

- بدقسمتی سے ماضی میں کراچی  کی عوام اور کراچی کے مسائل کو نظر انداز کیا گیا۔

- کراچی کے مسائل کو حل کرنا صوبائی حکومت کا کام ہے لیکن عوامی فلاح  و بہبودکو مد نظر رکھتے ہوئے وفاق اپنے وسائل کے مطابق کراچی کے مسائل کے حل میں اپنا حصہ ڈال رہا ہے۔ 

بلدیاتی نظام کراچی کے مسائل کا حل نکالنے میں معاون ثابت ہو گا۔

- ہماری حکومت کو تاریخ کا سب سے بڑا معاشی خسارہ ورثے میں ملا۔ لیکن  اب ملک کی معاشی صورتحال بہت حد تک بہتر ہوچکی ہے۔

- صوبہ سندھ کے معاشی حالات کرپشن کی وجہ سے ابتر ہوے۔ 

- وزیر اعظم نے وفاقی وزراء کو ہدایت کی کہ وہ کراچی کے ممبران اسمبلی سے رابطے مزید بڑھائیں۔ 

وفاقی وزیر منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار نے ممبران سندھ اسمبلی کو کراچی میں جاری اور زیر غور وفاقی منصوبوں پر بریفنگ دی۔

کے فور منصوبہ ہر صورت مکمل کیا جائے گا۔ گورنر سندھ کی وفاق کی جانب سے یقین دہاننی