وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت پاکستان اسٹیل مل کی بحالی کے حوالے سے پیش رفت کا جائزہ اجلاس

August 05, 2019

 
اسلام آباد،05اگست2019:
٭ وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت پاکستان اسٹیل مل کی بحالی کے حوالے سے پیش رفت کا جائزہ اجلاس
٭ اجلاس میں مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ، سیکرٹری وزارتِ صنعت و پیداوار، سیکرٹری نجکاری ڈویژن و دیگر افسران شریک
٭  وزیرِ اعظم کو اسٹیل ملز کی موجودہ صورتحال، مل کی بندش کی وجہ سے ہونے والے نقصانات،  اسٹیل مل کی بحالی کے سلسلے میں موجودہ حکومت کی جانب سے کیے جانے والے فیصلوں پر اب تک کی پیش رفت پر تفصیلی بریفنگ
٭ وزیرِ اعظم کو بتایا گیا کہ اسٹیل مل 2008تک منافع بخش ادارہ تھا۔ جوکہ 2009میں نقصانات کا شکار ہوا اور  جون 2015میں اسٹیل مل کو مکمل طور پر بند کر دیا گیا۔ ادارہ مسلسل خسارے کا شکار رہا ہے ۔ محض ملازمین کی تنخواہوں کی ادائیگیوں کے ضمن میں حکومت 37کروڑ  ماہانہ اخراجات برداشت کر رہی ہے۔ وزیرِ اعظم کو بتایا گیا کہ اب تک اسٹیل مل کے ذمہ واجبات217ارب تک پہنچ چکے ہیں۔
٭  اسٹیل مل کو نقصانات سے بچانا اور اسکی بحالی حکومت کی اولین ترجیح ہے: وزیرِ اعظم
٭  ایک منافع بخش ادارے کی تباہی ماضی کی بدا نتظامی اور غفلت کی واضح مثال ہے:  وزیرِ اعظم
٭ وزیرِ اعظم کی وزارتِ تجارت و صنعت کو اسٹیل مل کی بحالی کے سلسلے میں کوششیں تیز  کرنے کی ہدایت