وزیراعظم عمران خان سے پاکستان کی سکھ اور ہندو کمیونٹی کے نمائندوں کی وزیر اعظم آفس میں ملاقات

March 13, 2019

اسلام آباد ،13مارچ 2019ء 


وزیراعظم عمران خان سے پاکستان کی سکھ اور ہندو کمیونٹی کے نمائندوں کی وزیر اعظم آفس میں ملاقات ۔ ملاقات میں ڈاکٹر رمیش کمار ، سردار منندر پال سنگھ ، سردار تارا سنگھ اور روی کمار شامل تھے ۔ وفاقی وزیر مذہبی امور نور الحق قادری ، معاون خصوصی نعیم الحق بھی ملاقات میں موجود تھے ۔ 

ملاقات کا مقصد وزیراعظم کے اقلیتی برادری ، متروکہ املاک کے حوالے سے ویژن پر سکھ اور ہندو کمیونٹی کے نمائندوں کو مشاورتی عمل میں اعتماد میں لینا تھا ۔ اس ضمن میں وزیراعظم نے سکھ اور ہندو کمیونٹی کے نمائندوں کو اب تک کے حکومتی فیصلوں کے بارے میں آگاہ کیا اور ان سے مختلف تجاویز پر گفتگو کی ۔ وزیراعظم نے کہاکہ ماضی میں متروکہ وقف املاک بورڈ میں جو کرپشن ہوئی اس کا فوری خاتمہ کرنے کے لیے ایک ٹاسک فورس تشکیل دی جا رہی ہے جو متروکہ وقف املاک بورڈ کو ری اسٹرکچر کرنے کے لئے  اپنی سفارشات حکومت کو دے گی تاکہ اس ادارے میں کرپشن کا سد باب کیا جا سکے اور Shrines کی مناسب دیکھ بھال کی جا سکے۔  اس بات کا فیصلہ کیا گیا ہے کہ متروکہ وقف املاک کے پالیسی معاملات ایک بورڈ آف مینجمنٹ کے سپرد کیے جائیں گے جس میں سکھ اور ہندو کمیونٹی کے نمائندے بھی شا مل ہونگے ۔ پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ بورڈ آف مینیجمینٹ متروکہ وقف املاک  کے چیئرمین کا تقرر شفاف اور competitive طریقے سے کیا جائے گا جبکہ پچھلی حکومتوں میں چیئرمین کو سیاسی بنیادوں پر تعینات کیا جاتا تھا۔  سیکرٹری مذہبی امور نے اجلاس کو بریفنگ دی کہ بورڈ کا کام گوردواروں اور مندرں کی دیکھ بھال، Asset Management ،Promotion of Religious Tourism،تعلیم ، صحت اور شیلٹر ہومز کے پالیسی امور کی نگرانی ہوگا ۔ اس کے علاوہ قبضہ گروپوں سے متروکہ وقف املاک واگزار کروانا بھی بورڈ کا مینڈیٹ ہوگا ۔ اس ضمن میں ضروری ترامیم اور لیگل فریم ورک وضع کیا جارہاہے ۔ بریفنگ ۔ اجلاس کو مزید بتایا گیا کہ چیئرمین کی سربراہی میں بورڈ آف مینجمنٹ تمام پالیسی امور میں مکمل با اختیار ہوگا ۔

سکھ اور ہندوکمیونٹی کے نمائندوں نے وزیراعظم عمران خان کا متروکہ وقف املاک بورڈ اور اقلیتوں کے حقوق کے تحفظ کے حوالے سے اپنا ویژن شیئر کرنے اور اقلیتی برادری سے مشاورت کرنے پر وزیراعظم کا تہہ دل سے شکریہ ادا کیا اور کہا کہ متروکہ وقف املاک بورڈ کی تشکیل نو اور اس کو شفاف  بنانے کے حوالے سے جو اقدامات وزیراعظم لے رہے ہیں ان کی ماضی میں نظیر نہیں ملتی ۔ 

وزیراعظم عمران خان نے کہاکہ اقلیتوں کے حقوق کا تحفظ اور فلاح و بہبود اولین ترجیحات میں شامل ہے ۔ وزیراعظم نے مزید کہاکہ اس ضمن میں حکومت اقلیتی برادری کی مکمل مشاورت سے بھرپور اقدامات اٹھائے گی ۔ وزیراعظم نے کہا کہ اسلام اقلیتوں کی عبادت گاہوں کی حفاظت کی مکمل ضمانت دیتا ہے ۔