PM visit to deep sea with Pakistan Navy

December 24, 2017

 
 
’پاک بحریہ ملک کی بحری سرحدوںکے تحفظ کے لیے مکمل طور پر تیار اور پر عزم ہے‘۔ وزیر اعظم کا شمالی بحیرئہ عرب میں پاک بحریہ کی آپریشنل تیاریوں کا جائزہ
 
  پاک بحریہ کے جنگی یونٹس نے شمالی بحیرئہ عرب میں آپریشنل صلاحیتوں اور فلیٹ ریویو کا شاندار مظاہرہ پیش کیا۔ وزیر اعظم اسلامی جمہوریہ ءپاکستان جناب شاہد خاقان عباسی نے پاکستان نیوی کے بحری جہاز پی این ایس نصر سے ان آپریشنل مشقوں کا معائنہ کیا۔ پی این ایس نصر آمد پر چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی نے مہان خصوصی کا خیر مقدم کیا۔ اس موقع پر وزیر اعظم کوپاک بحریہ کے ےونٹس کی جانب سے کی جانے والی مشقوں اور آپریشنل مظاہرے کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔ 
 
 مہمان خصوصی نے کھلے سمندر میں مختلف آپریشنل مشقوں کا معائنہ کیا۔ ان مشقوں میں افرادی قوت اور سازو سامان کی ایک جہاز سے دوسرے جہاز پر منتقلی، بحری جہازوں اور ائیر کرافٹس کے ذریعے راکٹ ڈیپتھ چارج فائرنگ اور بذریعہ ہیلی کاپٹرسرچ اینڈ سیزر مشقیں شامل تھیں۔ پاک بحریہ کے مختلف ہوائی جہازوں اور ہیلی کاپٹرز نے وزیر اعظم کے سامنے شاندار فلائی پاسٹ کا مظاہرہ بھی کیا۔ آخر میں مظاہرے میں شریک تمام بحری جہازوں نے کالم فارمیشن میں اسکم پاسٹ کا مظاہرہ کیا اور معزز مہمان کو قومی نعرہ پیش کیا۔
 
  پاک بحریہ کے جنگی جہازوں کی جانب سے آپریشنل صلاحیتوں کا ایک شاندار مظاہرہ دیکھنے کے بعد وزیر اعظم جناح نیول بیس اورماڑہ پہنچے جہاں انہوںنے ریموٹ ڈیٹا اسٹیشن میا نوالی سمیت بیس پر قائم تنصیبات اور دفاعی سہولیات کا دورہ کیا۔ انہوں نے بیس کی آپریشنل تیاریوں پر اپنے اطمینان کا اظہار کیا اور مکران کی ساحلی پٹی پر پاک بحریہ کی جانب سے سماجی بہبود بالخصوص صحت اور تعلیم کے شعبوں میں کیے جانے والے اقدامات کی تعریف کی جس سے بلوچستان کی مقامی آبادی کی معاشی و سماجی صورتحال میں نمایاں بہتری آئے گی۔ 
 
 بعد ازیں ، وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے شمالی بحیرئہ عرب میں پاک بحریہ کی آبدوز سعد پر بورڈنگ کی اور سب میرین پر زیر آب سفر کیا۔ چیف آف دی نیول اسٹاف ایڈمرل ظفر محمود عباسی بھی سب میرین کے اس پہلے سفر میں وزیر اعظم کے ہمراہ تھے۔ اس موقع پر وزیر اعظم کو پاکستان نیوی سب میرین فورس کی تاریخ اور 1965ءاور 1971ءکی جنگوں میں اس کی کامیابیوں پر بریفنگ دی گئی۔ وزیر اعظم نے سب میرین ڈائیونگ اور سب میرین پروسیجرز بھی کیے جس کے بعد انہیں روایتی ڈالفن نشان پیش کیاگیا جو سب میرینرز کو عطا کیا جاتا ہے۔ 
 
 وزیر اعظم نے سمندر میں اپنی مصروفیات کے دوران پاک بحریہ کے افسروں اور جوانو ں سے بھی ملاقات کی اور ایک مشکل ماحول میں ملک کی بحری سرحدوں کے دفاع کے لیے ان کے عزم و حوصلے او رلگن کی تعریف کی۔ وزیر اعظم نے پاک بحریہ کی آپریشنل صلاحیتوں پر اپنے بھر پور اطمینان کا اظہار کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مجھے کامل یقین ہے کہ پاک بحریہ گوادر پورٹ اور پاک۔ چین اقتصادی راہداری کے تمام منصوبوں سمیت ملک کی بحری سرحدوں کے ہر قسم کے خطرات سے تحفظ کے لیے مکمل طور پر تیار اور پر عزم ہے